Wednesday, November 11, 2015

چین کی گرانٹ سے گوادر کے نئے انٹرنیشنل ائیرپورٹ پر آئندہ سال جنوری سے تعمیراتی کام کا آغاز



گوادر: چین کی گرانٹ سے گوادر کے نئے انٹرنیشنل ائیرپورٹ پر آئندہ سال جنوری سے تعمیراتی کام کا آغاز ہوگا، منصوبے کی لاگت کا تخمینہ 22.247 ارب روپے ہے، 4300ایکڑ رقبہ پر محیط انٹرنیشنل ائیرپورٹ 30ماہ کی مدت میں مکمل ہوگا جس میں سفر کی تمام جدید سہولتیں دستیاب ہونگی اس کے رن وے کی لمبائی 12ہزار فٹ ہوگی اور یہ پاکستان کا سب سے بڑا ائیرپورٹ ہوگا۔ یہ تفصیل منصوبے کے حوالے سے نیشنل ڈویلپمنٹ اینڈ ریفارم کمیشن کے وائس چیئرمین وانگشی تاؤ (Mr. Wang Xiaotao) کی قیادت میں گوادر کا دورہ کرنے والے وفد کو ان کی گوادر آمد کے موقع پر ائیرپورٹ پر دی جانے والی بریفنگ کے دوران فراہم کی گئی، وزیراعلیٰ بلوچستان ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ ، وفاقی وزراء احسن اقبال، کامران مائیکل، چیف سیکریٹری بلوچستان سیف اللہ چٹھہ اور دیگر اعلیٰ حکام بھی اس موقع پر موجود تھے، وفد کو منصوبے کے جوائنٹ ڈائریکٹر عباس حسین بخاری اور سول ایوی ایشن کے دیگر حکام کی جانب سے نقشوں اور چارٹوں کی مدد سے منصوبے کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی گئی جبکہ وفد نے منصوبے کی مجوزہ جگہ کا معائنہ بھی کیا۔ واضح رہے کہ گوادر میں نئے انٹرنیشنل ائیرپورٹ کی تعمیر کا منصوبہ پاک چائنا اقتصادی راہداری کا حصہ ہے۔ بعد ازاں وفد کو گوادر ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر سجاد بلوچ اور گوادر پورٹ اتھارٹی کے چیئرمین دوستین جمالدینی کی جانب سے گوادر کے زونل اور انٹرنل روڈ نیٹ ورک ، گوادر ماسٹر پلان اور دیگر اہم ترقیاتی منصوبوں کے حوالے سے بھی بریفنگ دی گئی۔

http://dailyazadiquetta.com



پاکستان کے ’سب سے بڑے ایئر پورٹ‘ کا معاہدہ

محمد کاظم

 بی بی سی اردو ڈاٹ کام، کوئٹہ


گوادرمیں تعمیر ہونے والا یہ ایئر پورٹ پاکستان کا سب سے بڑا ایئرپورٹ ہوگا


پاکستان کے صوبے بلوچستان کے ساحلی شہر گوادر میں پاکستانی اور چینی حکام نے گوادر ایئرپورٹ سمیت دیگر اہم منصوبوں کے معاہدوں پر دستخط کیے ہیں۔

جن معاہدوں پر دستخط ہوئے ان میں گوادر ایئرپورٹ اور فری ٹریڈ زون کے معاہدے شامل ہیں۔

گوادر ایئرپورٹ کے قریب راکٹ حملہ، کوئی نقصان نہیں ہوا

پاک چین اقتصادی راہداری: گوادر میں تین منصوبوں پر کام

وزیر اعلیٰ بلوچستان کے ترجمان جان محمد بلیدی کے مطابق گوادر ایئرپورٹ چار ہزار سے زائد ایکڑ پر محیط ہوگا۔

30 ماہ کے دوران تعمیر ہونے والا یہ ایئر پورٹ پاکستان کا سب سے بڑا ایئرپورٹ ہوگا۔

اس کے علاوہ ’چائنا اوورسیز پورٹ ہولڈنگ کمپنی‘ کو 40 سال کے لیے پہلے مرحلے میں فری ٹریڈ زون کی تعمیر کے لیے چھ سو 37 ایکڑ اراضی حوالے کی گئی۔

اس حوالے سے گوادر میں جو تقاریب منعقد ہوئیں ان میں وزیر اعلیٰ بلوچستان ڈاکٹر عبد المالک بلوچ، وفاقی وزیر احسن اقبال اور چائنا پلاننگ کمیشن کے نائب صدر وان جن کاؤ اور دیگر حکام نے شرکت کی۔


http://www.bbc.com/urdu/pakistan/2015/11/151111_china_gwadar_airport_ak?

No comments:

Post a Comment