Friday, June 14, 2013

لاپتہ افراد گھر نہیں پہنچ جاتے اس وقت تک ہمارا کیمپ موجود رہیگا،ماما قدیر بلوچ


کوئٹہ ( قدرت نیوز ) وائس فار بلوچ مسنگ پرسنز کے وائس چیئرمین ماماقدیربلوچ نے کہا ہے کہ لاپتہ افرادکابھوک ہڑتالی کیمپ اور احتجاج اس وقت تک ختم نہیں کرینگے جب تک ؂لاپتہ افراد میں سے ایک بھی شخص اپنے گھر واپس نہیں آجاتااس وقت تک ہمارا احتجاج جاری رہے گا اور ہوسکتا ہے ہم اس میں تیزی بھی لائے اور دھرنا دینے کا پہلے بھی اعلان کیا تھا گورنر ہاؤس سے وزیراعلیٰ کے سامنے دھرنا بھی دینگے انہوں نے یہ بات جمعہ کے روز این این آئی سے بات چیت کرتے ہوئے کہی انہوں نے ایک سوال کے جواب میں بتایا کہ اس وقت 17000افراد لاپتہ ہے انہوں نے کہاکہ وزیراعلیٰ بلوچستان نے جمعہ کے روز ہمارے لاپتہ افرادکے بھوک ہڑتالی کیمپ کا دورہ کیا اور جیسے پہلے حکمرانوں نے اور شخصیات نے کیمپ کا دورہ کیا تسلیاں دی اسی طرح وزیراعلیٰ بلوچستان نے بھی ہمیں تسلیاں دی ہیں انہوں نے کہاکہ یاد رہے کہ سابق وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی نے بھی اعلان کیا تھا کہ عیدالاضحی کے دن تمام لاپتہ افراد عید اپنے گھروالوں کیساتھ منائیں گے افسوس کے عید والے دن ہی ہمارے پیارے تو واپس نہیں ملے بلکہ 9لاشیں ملی سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی گھر چلے گئے مگر ہمارے پیارے واپس نہیں ملے ہم واضح کردینا چاہتے ہیں کہ جب ہمارے 17000لاپتہ افراد گھر نہیں پہنچ جاتے اس وقت تک ہمارا کیمپ موجود رہیگا چاہیے اس کیلئے ہمیں کوئی بھی قربانی کیوں نہ دینی پڑے ہم گریز نہیں کرینگے

http://www.dailyqudrat.com/2013/06/14/جب-ہمارے-17000لاپتہ-افراد-گھر-نہیں-پہنچ-جات/news.html#sthash.yjaCFjo2.Png9KIc5.dpuf

No comments:

Post a Comment